مفت کتابیں اور کتابچے

 کیلوری چیپل پاکستان گزشتہ بارہ سال سے ورلڈ مشنری پریس انڈیانا امریکہ کے ساتھ ملکر پاکستان بھر کی کلیسیاؤں میں مفت مسیحی کتابوں اور کتابچوں کی تقسیم کے ذریعے سے بشارتی خدمت سر انجام دے رہا ہے۔ جب ہم نے ورلڈ مشنری پریس کے ساتھ بے لوث اور رضا کارانہ طور پر خدمت کا آغاز کیا تو اِس ادارے کی صرف چند ایک چھوٹے کتابچوں کا اُردو ترجمہ موجود تھا۔ ہم نے اِس ادارے کے دیگر کتابچوں اور بائبل مقدس کی کتابوں کی سادہ تفسیر کے طور پر لکھی جانے والی کتابوں کا ترجمہ بھی کیا۔ اِس وقت ورلڈ مشنری پریس کی زیادہ تر کتابوں کا ترجمہ اُردو میں موجود ہے۔ یہ کتابیں امریکہ سے بھیجی جاتی ہیں اور کچھ کو یہاں پر پرنٹ کیا جاتا ہے۔ اِس کے بعد یہ پاکستان بھر کی کلیسیاؤں میں مفت تقسیم کے لیے بھیج دی جاتی ہیں۔ 

پیدایش کی کتاب کا مطالعاتی جائزہ

 پیدائش کی کتاب بائبل مُقدس کی کتاب ہے۔یہ کتاب بہت ساری ابتداؤں کی کتاب ہے جیسے کہ اِس کائنات، دُنیا، تمام مخلوقات، انسان، معاشرتی زندگی، تہذیبوں، اقوام اور بالخصوص اسرائیل قوم کی ابتدا کی کتاب۔ یہ کتاب بہت ساری ابتداؤں کے ساتھ ساتھ مسیحیت اور یہودیت کے بہت سارے بنیادی ترین عقائد کی ابتداؤں کی بھی کتاب ہے۔ بہت سارے علماء کا خیال یہ ہے کہ پیدایش کی کتاب بائبل کی دیگر منازل پر پہنچنے کا پہلا زینہ ہے۔ اِس کتاب کو پڑھے اور سمجھے بغیر ہم بائبل کی کسی بھی اور کتاب کی تاریخ، اُن میں بیان کردہ چیزوں اور واقعات اور الہیاتی پیغام کو پورے طور پر سمجھ نہیں سکتے۔ اِس لیے اِس کتاب کا مطالعہ بیحد ضروری ہے۔ اِس کتاب کے پہلے حصے یعنی پہلے گیارہ ابواب میں بیان کردہ واقعات کے حوالے سے بہت سارے لوگ طرح طرح کی افسانوی باتیں بیان کرتے ہیں۔ ہمیں اِس کتاب کے مطالعے سے یہ معلوم ہوتا ہے کہ ہمارا خُدا حقیقی طور پر انسانی تاریخ میں کام کرتا رہا ہے اور ہم آج اپنے اردگرد کی دُنیا میں اُس کا ثبوت با آسانی دیکھ سکتے ہیں۔ پیدائش کی کتاب کا مطالعاتی جائزہ نوجوانوں اور بچّوں کے لیے ترتیب دی گئی ہے۔ اِس میں بائبلی متن کو مختلف طرح کے اسباق میں تقسیم کر کے پیش کیا گیا ہے تاکہ طالبعلم اِس کتاب کے پیغام کے ساتھ اچھی طرح واقفیت حاصل کر لے اور اِس کی بدولت نہ صرف رُوحانی طور پر ترقی کرے بلکہ علمی لحاظ سے بھی ترقی کرے۔ کیلوری چیپل کی طرف سے یہ کتاب پورے پاکستان میں مفت مہیا کی جاتی ہے۔ اِس کتاب کو حاصل کرنے کے لیے آپ ہم سے رابطہ کر سکتے ہیں۔ 

متی کی انجیل کا مطالعاتی جائزہ

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

یوحنا کی انجیل کا مطالعاتی جائزہ

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

رومیوں کے خط کا مطالعاتی جائزہ

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

مکاشفہ کی کتاب کا مطالعاتی جائزہ

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

وہ جی اُٹھا ہے

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

خُدا آپ سے پیار کرتا ہے

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

مطالعہ بائبل میں میر ی رہنما کتاب

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

کلامِ مُقدس کو ذہن نشین کرنے کے لیے مدد گار کتاب

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

یسوع مسیح کی حیرت انگیز زندگی

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

مَیں کون ہوں کہ بادشاہ میرے لیے مواء؟

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

شیطان بمقابلہ مسیح

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

ہم خُدا کو کیسے جان سکتے ہیں؟

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

خُدا کی قدرت

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے

خُدا تک رسائی کی راہ

گزشتہ چند صدیوں کے دوران بہت سارے نام نہاد علماء نے مختلف انداز سے مسیحیت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ کبھی وہ نئے عہد نامے کی حقانیت پر سوال اُٹھاتے ہیں تو کبھی معجزات اور نئے عہد نامے کی تعلیمات کو جھوٹا قرار دیتے ہیں۔ ایک بہت بڑا گروہ ایسا بھی ہے جو یسوع کی ذات پر طرح طرح کے حملے کرتا رہتا ہے جیسے کہ یسوع مسیح کے الوہیت کے دعوؤں پر اعتراضات، اور اُسکی بشریت کے مختلف پہلوؤں پر بھی تنقید۔ بعض تو ایسے ہیں جو یہ ثابت کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں کہ یسوع حقیقی تاریخی شخصیت تھا ہی نہیں بلکہ ایک افسانوی شخصیت ہے جس کی مسیحیت نے پرستش کرنا شروع کر دی ہے۔ مزید کچھ لوگوں نے یہ بھی ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ تاریخی یسوع مسیح اور انجیل میں بیان کردہ یسوع مسیح یکسر دو مختلف شخصیات ہیں۔ اُن کے مطابق اگر تاریخ میں یسوع مسیح نامی کوئی ہستی ہوگزری بھی ہے تو وہ بالکل عام انسانوں جیسا کوئی انسان تھا لیکن اناجیل میں جس یسوع کی بات کی گئی ہے وہ دیومالائی کردار ہے۔ اِس سیمینار کی مدد سے آپ یسوع مسیح کی ذات کے تاریخی پہلو کے بارے میں سیکھ سکتے ہیں اور جان سکتے ہیں کہ بائبل سے باہر عام تاریخ یسوع کے بارے میں کیا کہتی ہے اور اُسے کس طرح سے پیش کرتی ہے